International News
Trending

Russia launches deadly airstrike on Ukraine

Lyov: Ukraine’s Defense Ministry claims that Russian troops have bombed a military base near the Ukrainian city of Lyov.

Ukrainian officials say Moscow has carried out a deadly airstrike on a military base in western Ukraine, killing at least 35 people and wounding 134 others.

The Ukrainian Defense Ministry says foreign troops were also present at the military base in Lviv, located near the Polish border, on which Russia fired 30 rockets.

Ukraine says Russian ground forces are about 25 kilometers (16 miles) from the center of Kyiv, causing people to flee.

The mayor of Mariupol said in a statement that 1,500 people had been killed in the 12-day Russian bombardment of the besieged coastal city, and that shelling continued.

Russia launches deadly airstrike on Ukraine

لیووف: یوکرینی وزارت دفاع نے دعویٰ کیا ہے کہ یوکرین کے شہر لیووف کے قریب ایک ملٹری بَیس پر روسی فوج نے بمباری کی ہے۔

تفصیلات کے مطابق یوکرین کے حکام کا کہنا ہے کہ ماسکو نے مغربی یوکرین میں ایک فوجی اڈے پر مہلک فضائی حملہ کیا ہے جس میں 35 افراد ہلاک ہو گئے، جب کہ بمباری سے 134 شہری زخمی ہو گئے ہیں۔

یوکرینی وزارت دفاع کا کہنا ہے کہ لیووف میں ملٹری بَیس پر غیر ملکی فوجی بھی موجود تھے، یہ ملٹری بَیس پولینڈ کی سرحد کے قریب واقع ہے، روس کی جانب سے جس پر 30 راکٹ برسائے گئے۔

یوکرین کا کہنا ہے کہ روسی زمینی افواج کیف کے مرکز سے تقریباً 25 کلومیٹر (16 میل) کے فاصلے پر ہیں جس کی وجہ سے لوگ یہاں سے افرا تفری میں بھاگ رہے ہیں۔

ماریوپول کے میئر نے ایک بیان میں کہا کہ 12 دنوں سے جاری روسی بمباری میں محصور ساحلی شہر میں 1500 افراد ہلاک ہو چکے ہیں، اور گولہ باری بدستور جاری ہے۔

دوسری طرف امریکا نے کہا ہے کہ وہ یوکرین کو اضافی چھوٹے ہتھیاروں، ٹینک شکن اور طیارہ شکن ہتھیاروں کی فراہمی کو 200 ملین ڈالر تک پہنچائے گا۔ تاہم روس نے واضح کر دیا ہے کہ اس کے فوجی یوکرین میں مغربی ہتھیاروں کی سپلائی کو نشانہ بنا سکتے ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.

Back to top button