News

On the roads of Russia now Trucks will run without drivers

روس کی سڑکوں پر اب ڈرائیور کے بغیر ٹرک چلیں گے

On the roads of Russia now Trucks will run without drivers
On the roads of Russia now Trucks will run without drivers
 
Driverless trucks could begin operating between Moscow and St. Petersburg in the summer of 2023, according to Russian state-owned company Russian Highways. According to foreign media, Russia's state-owned company Russian Highways says driverless trucks could begin operating between Moscow and St. Petersburg in the summer of 2023, and their operation will be part of a pilot project approved by the government.

روس کی سرکاری کمپنی رشین ہائی ویز کے مطابق بغیر ڈرائیور کے ٹرک ماسکو اور سینٹ پیٹرزبرگ کے درمیان 2023 کے موسم گرما میں چلنا شروع ہوسکتے ہیں۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق روس کی سرکاری کمپنی رشین ہائی ویز کا کہناہے کہ بغیر ڈرائیور کے ٹرک ماسکو اور سینٹ پیٹرز برگ کے درمیان 2023 کے موسم گرما میں چلنا شروع ہوسکتے ہیں اور ان کا آپریشن حکومت کی طرف سے تصدیق شدہ پائلٹ پروجیکٹ کا حصہ ہوگا۔

روسی وزارت ٹرانسپورٹ کی پریس سروس نے اعلان کیا ہے کہ حکام نے دونوں شہروں کے درمیان ایم الیون نیوا ہائی وے پر آزمائشی مدت کے لیے بغیر ڈرائیور ٹرک چلانے کے منصوبے کی منظوری دے دی ہے اور اس سلسلے میں روسی وزیراعظم میخائل میشوسٹین نے دستخط بھی کردیے ہیں۔

روسی میڈیا کے مطابق یہ تجربہ مال بردار ٹرکوں کی نقل و حمل میں ڈیجیٹل اختراعات کی جانچ کی اجازت دے گا، جس میں بنیادی طور پر انتہائی خودکار گاڑیوں کا آپریشن اور ضروری انفراسٹرکچر شامل ہے۔

Among them, the technical, organizational, and business solutions that will emerge from this pilot project will also form the basis of autonomous transport and logistics corridors. According to the ministry, the use of unmanned vehicles on public roads will not only improve traffic safety but will also contribute to the creation of new types of commercial activities in the country, while the project will reduce freight costs. It will also help. According to the Ministry of Transport, the project will reduce the need for drivers by 30 percent by 2025 and fuel consumption by 28 percent.

جن میں اس پائلٹ پروجیکٹ سے جو تکنیکی، تنظیمی اور کاروباری حل نکلیں گے وہ خود مختار ٹرانسپورٹ اور لاجسٹکس کوریڈورز کی بنیاد بھی بنائیں گے۔ وزارت کے مطابق عوامی سڑکوں پر بغیر پائلٹ گاڑیوں کے استعمال سے نہ صرف ٹریفک کو محفوظ بنانے میں بہتری آئے گی، بلکہ یہ ملک میں نئی قسم کی تجارتی سرگرمیوں کی تخلیق میں بھی حصہ ڈالے گی جب کہ اس منصوبے سے مال برداری کی لاگت کو کم کرنے میں بھی مدد ملے گی۔ وزارت ٹرانسپورٹ کے مطابق اس منصوبے سے 2025 تک ڈرائیوروں کی ضرورت 30 فیصد کم ہونے کے ساتھ ساتھ ایندھن کے استعمال میں بھی 28 فیصد تک کمی ہوگی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.

Back to top button