International News

Is Jakarta about to sink? Indonesian government decides to change capital

Jakarta: Indonesia has decided to relocate its capital Jakarta to the island of Borneo.

According to foreign media, the Indonesian government wants better management of public transport in the new capital where the natural environment is better and the risk of natural disasters is less.
The 34 34 billion new capital will be built, with at least three major issues, according to Dove Saung, a member of the Walahi Environmental Group, including climate change, threats to water systems, flora and fauna and air pollution. ۔

According to the report, the city of Jakarta with a population of 10 million has been declared a sinking city because Jakarta has become the fastest sinking city in the world due to continuous floods and excessive water extraction from the land. The northern part of Jakarta is 25 cm. The meter is sinking at an annual rate and by 2050 a third is expected to sink into the sea.
Is Jakarta about to sink? Indonesian government decides to change capital

جکارتہ : انڈونیشیا نے اپنے دارالحکومت جکارتہ کو تبدیل کرکے بورنیو کے جزیرے پر منتقل کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق انڈونیشین حکومت نئے دارالحکومت میں پبلک ٹرانسپورٹ کا ایسا بہتر انتظام چاہتی ہے جہاں قدرتی ماحول بھی بہتر ہو اور قدرتی آفات کا خطرہ بھی کم ہو۔

34 بلین ڈالر کا لاگت سے نئے دارالحکومت کی تعمیر ہوگی، جس میں ولہی ماحولیاتی گروپ کی رکن ڈووی ساونگ کے مطابق کم از کم تین بنیادی مسائل ہیں، جن میں ماحولیاتی تبدیلیاں، پانی کے نظام کو خطرہ، فلورا اور فنا اور فضائی آلودگی شامل ہیں۔

رپورٹ کے مطابق دس ملین آبادی والے شہر جکارتہ کو ایک ڈوبنے والا شہر قرار دیا گیا ہے کیوں کہ جکارتہ مسلسل سیلاب اور زمین سے بے تحاشہ پانی نکالنے کی وجہ سے دنیا میں تیزی سے ڈوبنے والا شہر بن گیا ہے، جکارتہ کا شمالی حصہ 25 سینٹی میٹر سالانہ شرح سے ڈوب رہا ہے اور 2050 تک ایک تہائی حصہ سمندر میں ڈوبنے کا خدشہ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.

Back to top button