Uncategorized

Hamad Azhar and Pervez Khattak went to smoke cigarettes: Defense Minister

ISLAMABAD: The internal story of the parliamentary party meeting chaired by the Prime Minister has come to light. Bitter words were exchanged between Federal Minister for Energy Hamad Azhar and Defense Minister Pervez Khattak in the meeting today.
According to ARY News, the main parliamentary party meeting was going on on Thursday regarding the finance bill.
Pervez Khattak said, "Prime Minister, I would like to take advantage of your presence and say something. Our members have strong reservations on the issue of gas. When will the gas schemes that have been started be completed?"
According to sources, Hamad Azhar started talking about gas situation in 2011, to which Pervez Khattak snapped, "Don't tell stories, tell me when gas will be available." Hammad Azhar replied, "I am telling you the same thing, even if you listen."
Sources said that Pervez Khattak stood on his seat three times in the meeting. Pervez Khattak along with Hamad Azhar also strongly criticized Shaukat Tareen. He said that Hamad Azhar has no knowledge of gas and electricity issues and Shaukat Tareen I could not satisfy even in the cabinet.
Hamad Azhar and Pervez Khattak went to smoke cigarettes: Defense Minister

اسلام آباد: وزیر اعظم کی زیر صدارت پارلیمانی پارٹی اجلاس کی اندرونی کہانی سامنے آ گئی، اجلاس میں آج وفاقی وزیر توانائی حماد اظہر اور وزیر دفاع پرویز خٹک کے درمیان تلخ کلامی ہو گئی۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق آج جمعرات کو فنانس بل کے حوالے سے اہم پارلیمانی پارٹی اجلاس جاری تھا، کہ ملک میں گیس کی قلت اور لوڈ شیڈنگ کے حوالے سے حماد اظہر اور پرویز خٹک میں تلخ کلامی ہونے لگی۔

پرویز خٹک نے کہا وزیر اعظم صاحب آپ کی موجودگی کا فائدہ اٹھا کر کچھ بات کرنا چاہتا ہوں، ہمارے ارکان کو گیس کے معاملے پر شدید تحفظات ہیں، گیس کی جو اسکیمیں شروع ہوئیں وہ کب مکمل ہوں گی؟

ذرائع کے مطابق حماد اظہر نے گیس کی صورت حال پر 2011 سے بات کا آغاز کیا، جس پر پرویز خٹک نے ٹوکا، آپ کہانیاں نہ سنائیں، یہ بتائیں گیس کب ملے گی۔ حماد اظہر نے جواب میں کہا میں آپ کو وہی بتا رہا ہوں آپ سنیں تو سہی۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ اجلاس میں پرویز خٹک تین باراپنی نشست پر کھڑے ہوئے، پرویز خٹک نے حماد اظہر کے ساتھ شوکت ترین پربھی سخت تنقید کی، انھوں نے کہا حماد اظہر کو گیس اور بجلی کے مسائل کا علم ہی نہیں ہے، اور شوکت ترین مجھے کابینہ میں بھی مطمئن نہیں کر سکا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.

Back to top button