Life StyleNews

دانتوں میں کیڑا لگنے کی وجوہات اور اس کا علاج

دانت میں کیڑا لگنا جسے دانتوں کا گلنا یا کیریز بھی کہا جاتا ہے، عوامل کے ایک مرکب کی وجہ سے پیدا ہوتے ہیں، یہ خاص طور پر تمام عمر کے لوگوں جس میں بچے، نوعمر اور بوڑھے بھی شامل ہیں ان میں عام ہے۔

اگر دانت کے کیڑے کا بروقت علاج نہیں کیا جاتا ہے تو وہ بڑے ہوجاتے ہیں اور آپ کے دانتوں کی گہری پرتوں کو متاثر کرتے ہیں جس کے نتیجے میں دانت میں شدید درد، انفیکشن اور دانتوں کے ٹوٹنے کا باعث بن سکتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ جب ہم کھانا کھاتے ہیں تو اس کے چند چھوٹے چھوٹے ٹکڑے ہمارے دانتوں میں پھنس جاتے ہیں، جب دانتوں میں پھنسے ہوئے کھانے سے منہ میں موجود بیکٹیریا آملتے ہیں تو اس کی وجہ سے دانتوں میں “پلاک” جمنا شروع ہوجاتا ہے۔

ڈاکٹرعبدالقادر نے کہا کہ اگر رات کو سونے سے قبل دانتوں کو برش کرلیا ہے تو صبح اٹھنے کے فوری بعد صرف کلی اور غرارے کرکے ناشتہ کرلیا جائے اور ناشتے کے بعد برش کیا جائے۔

انہوں نے کہا کہ ذیابیطس ایسی بیماری ہے جو دانتوں پر اثر انداز ہوتی ہے جس کے نتیجے میں دانتوں میں گیپ اور مسوڑھوں میں سوجن آجاتی ہے جو کسی طرح بھی ٹھیک نہیں۔

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button